DGPR AJK

وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں و کشمیر چوہدری انوارالحق نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر پر بھارت کے ناجائز قبضے کو کشمیری عوام نے کبھی تسلیم نہیں کیا اور نہ ہی کشمیری کبھی ہندوستان کے ظلم وجبر کے سامنے جھکیں گے

وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں و کشمیر چوہدری انوارالحق نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر پر بھارت کے ناجائز قبضے کو کشمیری عوام نے کبھی تسلیم نہیں کیا اور نہ ہی کشمیری کبھی ہندوستان کے ظلم وجبر کے سامنے جھکیں گے . انشاءاللہ پوری ریاست جموں و کشمیر کے پاکستان کے ساتھ الحاق کے مشن کو مکمل کیا جائے گا ۔ تمام بھارتی ظلم وستم کشمیریوں کو ان کے جائز مقصد سے باز رکھنے میں ناکام رہے. کشمیریوں کی کئی نسلیں قابض بھارتی افواج کے ہاتھوں ان گنت مظالم برداشت کر چکی ہیں اور انہوں نے بے مثال اور ناقابل تصور قربانیاں دی ہیں. آج کا دن میں مہاجرین کشمیر کے نام کرتا ہوں. ان خاندانوں کے نام کرتا ہوں جنھوں نے اپنے گھر اجڑتے دیکھے. یہ دن آپ مہاجرین کے نام کرتا ہوں جنہوں نے اپنا گھر بار چھوڑ کر ہجرت کی. مہاجرین کی مستقل آبادکاری اولین ترجیح ہے. مہاجرین ہمارے بھائی ہیں. مہاجرین کو تمام بنیادی سہولیات کی فراہمی اولین ترجیح ہے. وفاقی حکومت کے ساتھ ملکر حکومت آزادکشمیر مہاجرین کی آبادکاری کے لئے تمام وسائل بروئے لائے گی. ان خیالات کا اظہار وزیراعظم آزاد کشمیر چوہدری انوارالحق نے مہاجرین 1989.90 کیلئے 750 پختہ گھروں کی تعمیر کے منصوبے کے سنگ بنیاد کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا. تقریب سے وزیر بحالیات آزادکشمیر جاوید اقبال بڈھانوی اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا. اس موقع پر موسٹ سینئر وزیر کرنل(ر) وقار احمد نور,راجہ فیصل ممتاز راٹھور ، چوہدری محمد رشید, راجہ محمد صدیق خان, چوہدری اظہر صادق, سردار میر اکبر خان,ملک ظفر اقبال, محترمہ تقدیس گیلانی, چیف سیکرٹری داؤد محمد بڑیچ, انسپکٹر جنرل پولیس, سیکرٹری مالیات, سیکرٹری صاحبان حکومت, سربراہان محکمہ جات اور مہاجرین کی کثیر تعداد بھی اس موقع پر موجود تھی. تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم آزاد کشمیر چوہدری انوارالحق نے کہا کہ ہم مقبوضہ کشمیر کے عوام کو بھارتی جبر کا مقابلہ کرنے کی جرأت پر سلام پیش کرتے ہیں اور ہماری حمایت اس وقت تک جاری رہے گی جب تک ہندوستان کے غاصبانہ قبضے سے کشمیریوں کی آزادی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو جاتا.میں اس موقع پر حکومت پاکستان اور اس کار خیر میں شامل اداروں کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے اپنے کشمیری بھائیوں کی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے 750 مکانات کی تعمیر کا اعلان کیا اور فنڈز مہیا کئے. وزیراعظم نے کہا کہ میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ یہ مہاجرین جموں و کشمیر کی آبادکاری کی پہلی کڑی ہے. انشا ء اللہ بہت جلد حکومت پاکستان کے ساتھ ملکر باقی ماندہ خاندانوں کی مرحلہ وار بحالی اور باعزت روزگار کی فراہمی عمل میں لائی جائے گی. انہوں نے کہا کہ مکمل بحالی کا عمل پورا نہیں ہو جاتا حکومت آزادکشمیر آپ کے شانہ بشانہ کھڑی رہے گی اور مہاجرین بھائیوں کو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گی.اس موقع پر مہاجرین جموں و کشمیر نے پاکستان زندہ باد ،افواج پاکستان زندہ باد اور وزیراعظم آزادکشمیر زندہ باد کے فلک شگاف نعرے لگائے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر بحالیات جاوید اقبا بڈھانوی نے کہا کہ مہاجرین کی آبادکاری کے لئے تمام ممکنہ وسائل بروئے کار لا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مہاجرین کو صحت کی سہولیات، تعلیم سمیت زندگی کی تمام بنیادی سہولیات کی فراہمی اولین ترجیح ہے۔ وزیر بحالیات نے کہا کہ مہاجرین ہمارے بھائی ہیں ان کی آبادکاری کے لئے حکومت تمام وسائل بروئے کار لائے گی۔

Share This Post

More To Explore