DGPR AJK

عالمی یوم ماحولیات کے موقع پر انوائرمنٹل پروٹیکشن ایجنسی کی جانب سے مختلف سکولوں کے طلبہ وطالبات کے مابین تقریری مقابلہ بعنوان ”انسانی صحت اور قدرتی ماحول پر پلاسٹک آلودگی کے مضر اثرات“ منعقد کیا گیا۔

عالمی یوم ماحولیات کے موقع پر انوائرمنٹل پروٹیکشن ایجنسی کی جانب سے مختلف سکولوں کے طلبہ وطالبات کے مابین تقریری مقابلہ بعنوان ”انسانی صحت اور قدرتی ماحول پر پلاسٹک آلودگی کے مضر اثرات“ منعقد کیا گیا۔ تقریری مقابلہ جات میں آزادکشمیر بھرکے دس اضلاع کے پرائیویٹ اور سرکاری سکولوں کے طلبہ وطالبات نے حصہ لیا۔ اس تقریری مقابلے کا مقصد ماحولیات کے حوالہ سے آگاہی فراہم کرنا تھا۔ اس تقریری مقابلہ میں محکمہ ایلیمنٹری وسکینڈری ایجوکیشن اور سٹار ہائیڈروپاور کمپنی کا تعاون بھی شامل تھا۔ اس حوالہ سے منعقدہ تقریب سے آزادکشمیر کے سیکرٹری ماحولیات و وائلڈ لائف مظہر فاروق جنجوعہ، ڈائریکٹرماحولیات شفیق عباسی، ایم ڈی سٹار ہائیڈرو پاور عاطف علی شاہ و دیگر خطاب کیا جبکہ تقریب میں آزادکشمیر بھر سے اساتذہ اور طلبہ وطالبات نے حصہ لیا۔ تقریری مقابلہ جات میں ججز کے فرائض ڈپٹی ڈائریکٹر تحقیق وترقی نصاب سلطان علی طاہر، ڈپٹی ڈائریکٹر انوائرمنٹ پروٹیکشن ایجنسی ڈاکٹر سردار محمد رفیق خان،ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفیسر مظفرآباد راجہ سہیل خان اور لیکچرار ایجوکیشن حق نواز مغل نے سرانجام دئیے۔ تقریری مقاملہ میں پہلی تین پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ وطالبات کو نقد انعام اور سرٹیفکیٹ دئیے گئے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری ماحولیات مظہر فاروق جنجوعہ نے کہا کہ آج عالمی یوم ماحولیات کو اس عز م کے ساتھ منایا جا رہا ہے کہ ہم آزادکشمیر کو ماحولیات کے حوالہ سے ایک ماڈل خطہ بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم آزادکشمیر، وزیر ماحولیات،وزیر وائلڈ لائف اور چیف سیکرٹری آزادکشمیر کے ویثرن اور ہدایات کی روشنی میں انوائرمنٹ پروٹیکشن ایجنسی ماحولیات کو درپیش چیلنجز سے نبردآزما ہونے کے لیے کام کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اسوقت پوری دنیا کو Climate Changeکے چیلنجز کا سامنا ہے جسکی وجہ سے ہم آئے روز ڈیزاسٹر کا سامنا کر رہے ہیں۔ ہم نے گزشتہ دنوں مسلم ہینڈز کے تعاون سے منگلا ڈیم کی صفائی سے اپنا کام شروع کیا ہے اور پانی کے اس ذخیرہ کو پاسٹک بیگ اور بوتلوں سے پاک کیا ہے۔ اسی طرح آزادکشمیر میں تین سٹیٹ آف دی آرٹ لیب قائم کر دی گئی ہیں۔ان لیب کا ہم نے پہلی مرتبہ روایت کو تبدیل کرتے ہوئے بچوں سے افتتاح کروایا ہے تاکہ ہم آنے والے نسل کو ماحولیاتی چیلنجز کے حوالہ سے آگاہی فراہم کر سکیں۔انہوں نے کہا کہ انوائرمنٹ پروٹیکشن ایجنسی نے آزادکشمیر کے ماحول کو خراب کرنے والے کرش پلانٹ کے حوالہ سے رپورٹ پیش کی جسے سپریم کورٹ نے سراہا اور اس پر کارروائی کی۔ تمام ہائیڈرو پاور پراجیکٹس کے لیے انوائرمنٹ کی جانب سے منظوری لینا ضروری ہے۔مستقل میں ہم کوہالہ سے تاؤ بٹ تک ڈسٹ بن لگانے کا منصوبہ شروع کر رہے ہیں جس کے تحت کوہالہ سے تاؤ بٹ تک ہر ڈسٹ بن سے اگلی ڈسٹ بن کا فاصلہ درج ہوگا۔انہوں نے کہا کہ وائلڈ لائف کے حوالہ سے ہمارے محکمہ کی آگاہی مہم کا نتیجہ تھا کہ چھتر کلاس کے مقام پر مقامی لوگوں نے چیتے کواسکے نومولودبچوں سمیت د و ماہ تک بحفاظت اپنی پناہ میں رکھا۔انہوں نے کہا کہ نئی نسل کو ماحولیاتی تبدیلیوں کے اثرات اور جنگلی حیات کے تحفظ کے حوالہ سے آگاہی فراہم کرنا وقت کی ضرورت ہے، جس کا ہم نے آغاز کر دیا ہے اور آئندہ بھی اسطرح کے پروگرام مزید بہتر منظم طریقے سے منعقد کرواتے رہیں گے۔ڈائریکٹر انوائرمنٹ پروٹیکشن ایجنسی شفیق عباسی نے کہا کہ ماحولیاتی تبدیلیاں اسوقت بنی نوح انسان کے لیے شدید خطرات کا پش خیمہ ہیں۔ان ماحولیاتی تبدیلیوں سے ہماری زراعت کا شعبہ بھی بری طرح متاثر ہورہا ہے اور زرعی زمین میں کمی واقع ہو رہی ہے۔گلوبل وارمنگ اور موسموں کے تغیروتبدل کے حوالہ سے دنیا کو خطرات لاحق ہیں۔ اس حوالہ سے ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ہم مل کر اپنے اپنے حصے کا کردار ادا کریں تاکہ مستقبل میں ان ماحولیاتی تبدیلیوں کے چیلنجز سے نبرد آزما ہوا جا سکے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ ماحولیاتی تبدیلیاں اسوقت زمین کے درجہ حرارت میں اضافے کا باعث بن رہی ہیں اور ساتھ ہی ساتھ ان سے قدرتی آفات میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔ ماحولیاتی تبدیلیوں کے چیلنجز سے نبرد آزما ہونے کے لیے ہنگامی بنیاوں پر کام کی ضرورت ہے اور اس ضمن میں آگاہی فراہم کرنا ضروری ہے۔ نوجوان نسل کو اس حوالہ سے آگاہی فراہم کر کے خاطر خواہ نتائج حاصل کیے جا سکتے ہیں جس کے لیے تمام متعلقہ محکمہ جات کو مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے

Share This Post

More To Explore